آسٹریلیا میں

جو بھی غیرقانونی طورپر کشتی کے ذریعے آسٹریلیا پہنچنے کی کوشش کریگا اسے یا تو واپس کردیا حا ئیگا یا اسکے اپنے ملک بھیج دیا جائیگا ۔

آسٹریلیا کی سرحدیں ان سب کے لئے بند ہیں جوغیرقانونی طور پرآسٹریلیا پہنچنے کی کوشش کریں گے اور یہ بند ہی رہیں گی ۔

غیرقانونی طریقے سے آسٹریلیا پہنچنے کی کوشش کرنے والوں کو کوئی مالی مفاد حاصل نہیں ہوگا ۔

آپ خود اور اپنے اہل خانہ اور دوستوں کوانسانی اسمگلروں کے جھوٹ سے بےوقوف نہ بننے دیں ۔

انسانی اسمگلر آپ کے گھر والوں کا پیسہ لوٹ لیں گے اور آپکے خاندان والوں کی زندگی خطرے میں پڑجائیگی ۔

کشتی کے ذریعے غیرقانونی طریقے سے آسٹریلیا آنے کی کوشش کرنے والوں کیلئے آسٹریلیا میں آبادکاری کبھی ممکن نہیں ہوگی ۔

آپریشن ساورن بارڈرز

آسٹریلین حکومت سرحدی حفاظت کے سخت اقدامات پر عمل کر رہی ہے تاکہ سمندر کے راستے انسانی سمگلنگ کو روکا جاۓ، سمندر میں جانوں کے ضیاع کی روک تھام کی جاۓ اور آسٹریلیا کی سرحدوں کو محفوظ رکھا جاۓ۔ غیر قانونی طور پر کشتی کے ذریعے آسٹریلیا آنے کی کوشش کرنے والا کوئی شخص کبھی آسٹریلیا کو اپنا وطن نہیں بنا پاۓ گا۔

This poster represents the 'you will be turned back' policy. The poster directs the reader to www.australia.gov.au/novisa

آپریشن ساورن بارڈرز کے تحت غیر قانونی طور پر کشتی کے ذریعے آسٹریلیا آنے کی کوشش کرنے والے ہر شخص کو واپس اس ملک کو بھیج دیا جاۓ گا جہاں سے وہ روانہ ہوا تھا۔

آسٹریلیا میں آبادکاری کا موقع کسی ایسے شخص کو کبھی حاصل نہیں ہو گا جو غیر قانونی طور پر کشتی سے سفر کرتا ہے۔

یہ اصول سب کیلئے ہیں: خاندان، بچے، تنہا نابالغ افراد، تعلیم یافتہ اور ہنرمند افراد – کوئی استثناء نہیں پایا جاتا۔

میڈیا رلیز : مضبوط اور مستحکم سرحدوں کے 1000 دن

اپنے پیسے ضائع نہ کریں – انسانی سمگلنگ کرنے والے جھوٹ بول رہے ہیں

انسانی سمگلروں کو رقم دے کر اپنے رشتہ داروں اور دوستوں کی سلامتی خطرے میں نہ ڈالیں۔ اگر آپ کے رشتہ دار اور دوست ویزے کے بغیر کشتی سے آسٹریلیا کا سفر کریں گے تو انہیں آسٹریلیا میں آباد نہیں کیا جاۓ گا۔

خواہ انہیں پناہ گزین تسلیم کر لیا جاۓ، انہیں آسٹریلیا میں آباد نہیں کیا جاۓ گا۔

یہ اقدامات انسانی سمگلروں کو روکنے اور سمندر میں جانوں کے مزید ضیاع کو روکنے کیلئے متعارف کراۓ گئے ہیں۔

انڈونیشیا میں UNHCR کے ساتھ رجسٹر کرنا

آسٹریلین حکومت نے انڈونیشیا سے آنے والے پناہ گزینوں کی آبادکاری کے سلسلے میں اپنے اصول بدل لیے ہیں۔

اگر آپ انڈونیشیا کا سفر کرتے ہیں اور یکم جولائی 2014 کو یا اس کے بعد انڈونیشیا میں UNHCR کے ساتھ رجسٹر کرتے ہیں تو آپ پر آسٹریلیا میں آبادکار ی کیلئے غور نہیں کیا جاۓ گا۔

یکم جولائی 2014 سے پہلے انڈونیشیا میںUNHCR کے ساتھ رجسٹر کرنے والے لوگوں میں سے بھی آسٹریلیا کی جانب سے آبادکاری کیلئے لیے جانے والوں کی تعداد کم کر دی گئی ہے۔

یہ اصول سب کیلئے ہیں۔ کوئی استثناء نہیں پایا جاتا۔

معلوماتی پرچہ